بادام غذا کا نہایت اہم جز ہے اور خشک پھلوں میں بادام کو امتیازی حیثیت حاصل ہے بادام میں مواد لحمیات کی مقدار گوشت سے زیادہ ہوتی ہے جسم کے افعال درست رکھنے اور صحت کے محافظ اجزا بھی بادام میں نہایت وافر مقدار میں ہوتے ہیں۔ بادام کو صرف غذا کے طور پر استعمال نہیں کیا جاتا بلکہ یہ ایک بہترین دوا اور ٹانک بھی ہے۔ گرمیوں اس کو پیس کر ٹھنڈائی کے طور پر اور جاڑوں میں حریرے کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔ گلے کی خشکی میں اس کو چبانا گلے کو صاف کرتا ہے اور خراش کو دور کرتا ہے۔ دودھ کی کمیابی کی صورت میں یہ دودھ کا بہترین بدل ہے۔ میٹھے بادام بہت لذیذ ہوتے ہیں اور انہیں ذیابیطس کے مریض اعلیٰ غذا کے طور پر استعمال کرسکتے ہیں۔ سات عدد بادام ایک تولہ مصری کے ساتھ رات کو سوتے وقت کھالیے جائیں تو اس سے نظر تیز ہوتی ہے اور دماغ کو طاقت حاصل ہوتی ہے۔ بادام کی گریاں سات عدد مصری چھ ماشہ اور سونف چھ ماشہ کوٹ کر سفوف بنائیں اور ہر روز رات کو سوتے وقت گرم دودھ سے استعمال کریں انشاء اللہ عینک سے چھٹکارا مل جاتا ہے۔ یہ نسخہ متواتر استعمال کریں اگر حاملہ عورت ساتویں مہینے سے چھوٹا چمچہ بادام روغن رات کو استعمال کرنا شروع کردے تو بچے کی پیدائش میں سہولت ہوتی ہے۔ پانی میں بھیگے ہوئے بادام چھ عدد لے کر خوب باریک کردیں اور جوش کھاتے ہوئے آدھا کلو دودھ میں ملادیں جب دو تین جوش آجائیں تو دودھ آگ سے اتار کر ٹھنڈا کرلیں اور جب پینے کے لائق ہوجائے تو مصری ملائیں لیکن شہد ملانے سے یہ نہایت خوش ذائقہ اور مقوی ہوتا ہے صرف دماغ ہی نہیں پورے جسم کی پرورش کرتا ہے۔ کڑوا بادام: تلخ بادام شکل میں شیریں بادام جیسا ہوتا ہے اسے زیادہ تر چہرے کو نکھارنے اور جھائیں دور کرنے کیلئے استعمال کرتے ہیں