View RSS Feed

hussainmemon

SHABJADA FAZAL KARIM SAYS....

Rate this Entry
by , 10th February 2012 at 04:35 PM (821 Views)
Quote Originally Posted by hussainmemon View Post
امریکہ، بھارت اور اسرائیل کا شیطانی اتحاد چاہتا ہے، صاحبزادہ فضل کریم

جماعت اہلسنّت پاکستان کے ہیڈکوارٹر انٹرنیشنل سنی سیکرٹریٹ میں مسئلہ کشمیر اور اقوام متحدہ کی ذمہ داریاں کے موضوع پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین اور رکن قومی اسمبلی صاحبزادہ فضل کریم نے کہا ہے کہ بھارت سے تجارت خسارے کا سودا ہے، بھارت کے ہاتھ لاکھوں کشمیریوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں، اقوام متحدہ نے مسئلہ کشمیر سے متعلق قراردادیں سردخانے میں ڈال کر مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کیا ہے، اقوام متحدہ راتوں رات مشرقی تیمور میں عیسائی ریاست کے قیام کے لیے قرارداد منظور کرتی ہے لیکن کشمیر میں انسانی حقوق کا نوٹس نہیں لیتی۔

صاحبزادہ فضل کریم نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ کے جھنڈے تلے بلقان میں لاکھوں مسلمانوں کو قتل کیا گیا اور پچھلے 50 سال سے مقبوضہ فلسطین اور مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کو قتل کیا جا رہا ہے، انہیں قید میں ڈالا جا رہا ہے اور ان کی زمینوں پر اعلانیہ قبضہ کیا جا رہا ہے لیکن اقوام متحدہ کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی۔ صاحبزادہ فضل کریم نے مزید کہا کہ امریکہ، بھارت اور اسرائیل کا شیطانی اتحاد چاہتا ہے کہ جس طرح عربوں کو اسرائیل کے ساتھ سفارتی اور تجارتی تعلق میں ملوث کر کے انہیں مسئلہ فلسطین سے دور کیا گیا اسی طرح اب پاکستان کو بھارت کے ساتھ تجارت میں ملوث کر کے مسئلہ کشمیر سے دور کر دیا جائے۔

صاحبزادہ فضل کریم نے کہا کہ بھارت پاکستان کا پانی روک کر دریاؤں پر ڈیم بنا رہا ہے اور پاکستان کو بنجر بنانے کی سازش کی جا رہی ہے لیکن پاکستان کے نااہل حکمرانوں نے پہلے بھی پاکستان کے تین دریا بھارت کو فروخت کر کے پاکستان کی شہ رگ کاٹنے کی کوشش کی تھی اور اب پھر بھارت کو پسندیدہ ریاست قرار دے کر کشمیری شہداء کے خون سے غداری کی جا رہی ہے۔ صاحبزادہ فضل کریم نے کہا کہ بھارت کو پسندیدہ ریاست قرار دینے سے کشمیری مسلمانوں میں مایوسی پھیل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر بھارت کے ساتھ کسی بھی قسم کا لین دین ملکی مفادات کے منافی ہو گا۔

سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے سنی اتحاد کونسل کے سیکرٹری جنرل اور سابق وفاقی وزیر حاجی محمد حنیف طیب نے کہا کہ حکومت پاکستان بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دینے کی بجائے مسلم ممالک کے ساتھ تجارت کو فروغ دے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم ممالک باہمی تعاون سے ہر شعبے میں خودکفیل ہو سکتے ہیں۔ حاجی محمد حنیف طیب نے کہا کہ بھارت افغانستان میں درجن سے زائد قونصل خانے کھول کر بلوچستان میں بدامنی پھیلا رہا ہے اور بلوچستان کو بنگلہ دیش بنانے کی عالمی سازش کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی تشویشناک صورتحال کے حل کے لیے حکومت اور اپوزیشن مشترکہ لائحہ عمل تیار کریں۔

Submit "SHABJADA FAZAL KARIM SAYS...." to Digg Submit "SHABJADA FAZAL KARIM SAYS...." to Twitter Submit "SHABJADA FAZAL KARIM SAYS...." to Facebook Submit "SHABJADA FAZAL KARIM SAYS...." to del.icio.us Submit "SHABJADA FAZAL KARIM SAYS...." to StumbleUpon

Categories
Uncategorized

Comments