Results 1 to 15 of 15

must read a story of suside bomber (age 14)

This is a discussion on must read a story of suside bomber (age 14) within the Behas-o-Mubahisa forums, part of the General Forum category; نوجوان کے خودکش بننے کی کہانی سمیع یوسفزئی افغان صحافی یہ تصویر ایک کمرے میں کھینچی گئی ہے جس میں ...

  1. #1
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    must read a story of suside bomber (age 14)

    نوجوان کے خودکش بننے کی کہانی

    سمیع یوسفزئی
    افغان صحافی


    یہ تصویر ایک کمرے میں کھینچی گئی ہے جس میں ایک عمدہ بستر کے سامنے ایک کرسی پر شاکراللہ بیٹھا ہےست اس کمرے کی کھڑکی بھی کھلی ہے اور اس میں قالین بھی بچھا ہوا ہے بڑی بڑی نیلی آنکھوں والا چودہ سالہ قبائلی لڑکا افغان انٹیلیجنس کے تحقیقاتی مرکز میں بےبسی اور معصومیت کی تصویر بنا ہوا تھا۔
    شاکراللہ نے اپنی داستان اسیری سناتے ہوئے بتایا کہ اسے اٹھارہ مارچ 2008 کو افغان انٹلیجنس کے اہلکاروں نے دو افغان ساتھیوں ڈاکٹر سخی گل اور محمد کے ساتھ بارود سے بھری ایک گاڑی کے ساتھ دہشت گردی کی مبینہ کارروائی کے لیے شمالی وزیرستان سے ملحق افغان شہر خوست میں داخل ہوتے ہوئے گرفتار کیا تھا۔
    افغان انٹیلیجنس اہلکاروں کے مطابق شاکر اللہ کو 21 مارچ کو افغان سالِ نو کے جشن کے موقع پر مبینہ خودکش حملہ کے لیے افغانستان لایا گیا تھا۔ شاکر اللہ کے ساتھیوں سخی گل اور محمد اپنے جُرم اور منصوبے کا اقرار کر چکے ہیں۔
    شاکر اللہ کا تعلق جنوبی وزیرستان کے جنڈولہ علاقے سے بتایا جاتا ہے۔ اس کے والد اپنے گاؤں میں رہائش پذیر ہیں اور گزشتہ سال شکر اللہ کو ابتدائی اسلامی تعلیم کے لیے جنڈولہ کے نزدیک ایک گاؤں کے مدرسہ میں داخل کرایا گیا تھا۔
    اس پاکستانی لڑکے کے مطابق تین ماہ قبل جب اُنہوں نے قرآن کریم کو حرف بہ حرف پڑھنے کی تعلیم مکمل کر لی تو مدرسے کے انچارج مولوی صادق کے دوست اور مقامی طالبان کے کمانڈر مولوی نذیر اللہ نے اسے مبارک باد دی۔ اس نے شاکر سے کہا کہ ختمِ قرآن کے بعد جہاد پر جانے سے اسے بہت بڑی سعادت نصیب ہوگی۔
    شاکر اپنی آنکھوں میں بے بسی کے آنسوؤں کو روکتے ہوئے دھیمی آواز میں بولا کہ اگلی صبح مولوی نذیر نے دوبارہ آکر اُسے حکم دیا کے تیار ہوجاؤ تمہیں جانا ہے۔ شاکر اللہ کے بقول میں نےدرخواست کی کہ مجھے گھر جانے دیا جائے کیونکہ اسے اپنی ماں سے ملنا ہے لیکن عزیز اللہ نے کہا کہ وہ لیٹ ہو رہے ہیں واپس آکر اپنی ماں سے مل لینا۔

    ایک سوال کے جواب میں کہ آپ نے انکار کیوں نہیں کیا، شاکر نے اپنے سامنے بیٹھے افغان انٹیلیجنس کے اہلکار کی آنکھوں میں آنکھ ڈال کر کہا کہ میرے اندر انکار اور بھاگنے کی قوت ختم ہو گئی تھی۔ میرے مدرسے کے اُستاد نے مجھے جانے پر مجبور کیا اس لیے میں خاموشی سے عزیز اللہ کے ساتھ میران شاہ چلاگیا۔
    مجھے اپنی ماں سے ملنا ہے
    میں نےدرخواست کی کہ مجھے گھر جانے دیا جائے کیونکہ مجھے اپنی ماں سے ملنا ہے لیکن عزیز اللہ نے کہا کہ وہ لیٹ ہو رہے ہیں واپس آکر اپنی ماں سے مل لینا


    شاکراللہ


    شاکر اللہ کا کہنا تھا کہ میرانشاہ میں بڑے بڑے بالوں والے طالبان کے ساتھ رات گزاری اور پھر دوسرے روز علی الصبح مولوی عزیز اللہ اُن کو پاک افغان سرحد پر غلام خان لے گئے جہاں عزیز اللہ نے اُن کو ایک گاڑی میں بٹھا کر خوست بھیج دیا۔
    خوست ٹیکسی سٹینڈ پر ڈاکٹر سخی گل نے اسے وصول کیا اور اپنے ایک کمرے میں لے گیا جہاں رات گزارنے کے بعد ڈاکٹر سخی گل نے اسے ایک افغان شخص کے حوالے کیا جو اسے سائیکل پر خوست شہر کے تبلیغی مرکز لےگیا۔
    تبلیغی مرکز میں تین دن کے دوران اسے تبلیغیوں کے ساتھ کھانا کھانے کی تو اجازت تھی لیکن کسی سے بات کرنے کی اجازت نہیں تھی۔ مسلسل تین روز تک اس کی نگرانی کی گئی اس دوران اس نے بھی کسی سے بات نہیں کی۔
    چوتھے دن ڈاکٹر سخی گل ان کو موٹر سائیکل پر ایک گھر لے گیا جہاں انہوں نے رات گزاری۔ پانچویں دن صبح ڈاکٹر سخیگل اور محمد ایک گاڑی میں شہر کے لیے روانہ ہوئے تو انہیں ساتھ لے گئے۔
    شاکر اللہ کے بقول بعد میں اسے تحقیقات کے دوران معلوم ہوا کہ فرنٹ سیٹ پر اس کے ساتھ جو ایک تھیلا رکھا گیا تھا وہ دھماکہ خیز مواد سے بھرا تھا۔ یہ بعد میں مجھے ایک ٹی وی سکرین پر بھی سکیورٹی اہلکار نے دکھایا جو کہ سفید آٹے جیسی چیز سے بھرا تھا۔
    شاکر اللہ کا کہنا ہے کہ وہ کبھی کسی بھی طرح کی ملٹری ٹریننگ کے لیے نہیں گیا اور نا جس مدرسے میں وہ تعلیم حاصل کر رہے تھے جس میں لگ بھگ پچاس کے قریب طالبعلم تھے کبھی تربیت دی گئی تھی۔ شاکر کا کہنا تھا کہ انہوں نے صرف اسے ہی جہاد پر بھیجا اور اس سے قبل کسی بھی قرآن ختم کرنے والے کو نہیں بھیجا۔
    شاکر اللہ کا کہنا ہے اُسے اس کی مرضی کے خلاف یہاں لایا گیا ہے لیکن اگر اُسے رہائی مل جائے تو وہ سیدھا اپنی ماں کے پاس جائے گا۔ ایک سوال کے جواب میں کہ مدرسے کے مولوی اور عزیز اللہ کے ساتھ وہ کیا کریں گے، اُن کا جواب تھا کہ وہ بہت مضبوط لوگ ہیں وہ ان کے خلاف کچھ نہیں کریں گے۔
    شاکر اللہ کے تین اور بھائی بھی ہیں اور ایک بہن ہے۔ بڑے بھائی رحمان متحدہ عرب امارات میں کام کرتے ہیں، دوسرا بھائی کمال الدین کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ میں مزدوری کرتا ہے اور تیسرا گاؤں میں اپنے والدین اور ایک بہن کے ساتھ رہائش پذیر ہے۔ شاکر سب بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹا ہے اور صرف قرآن پڑھ سکتا ہے۔ وہ کبھی سکول نہیں گیا۔ اُسے قرآن کے علاوہ کچھ پڑھنا لکھنا نہیں آتا۔
    شاکر کا کہنا ہے کہ حراست کے دوران افغان انٹیلیجنس نے انہیں نا کبھی مارا اور نا کبھی کوئی اذیت دی۔ شاکر کا کہنا ہے کہ وہ اپنی ماں کو بہت یاد کرتا ہے۔ اس نے کہا کہ جب وہ خوست شہر میں تھا تو دو مرتبہ اُس کے والد اُس سے ملنے آئے تھے لیکن انہیں ملنے نہیں دیا گیا۔
    طالبان بچوں کو افغانستان بھیجتے
    قبائلی علاقوں میں موجود القاعدہ طالبان جنگجو باقاعدگی سے 14-10 سال کی عمر کے بچوں کو بڑی تعداد میں ریکروٹ کر کے افغانستان بھیج دیتے ہیں جو یہاں آ کر خودکش بمبار بن جاتے ہیں


    سعید انصاری

    افغان اٹیلیجنس کے اعلیٰ اہلکار سعید انصاری کا کہنا ہے کہ قبائلی علاقوں میں موجود القاعدہ طالبان جنگجو باقاعدگی سے 14-10 سال کی عمر کے بچوں کو بڑی تعداد میں ریکروٹ کر کے افغانستان بھیج دیتے ہیں جو یہاں آ کر خودکش بمبار بن جاتے ہیں۔
    سعید انصاری کا کہنا ہے کہ ان بچوں کے ذہنوں پر دہشت گرد بڑی آسانی کے ساتھ کنٹرول کر لیتے ہیں اور پھر اُنہیں ریمورٹ کنٹرول کی طرح استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ایک سال قبل بھی ایک 14 سالہ قبائلی لڑکے کو خوست کے گورنر ارسلا جمال پر خودکش حملہ سے پہلے گرفتار کر لیا گیا تھا جسے بعد میں صدر حامد کرزئی نے معاف کرتے ہوئے اس کے والدین کے حوالے کر دیا تھا۔
    اس لڑکے کی رہائی کب ممکن ہوسکے گی اس بارے میں افغان حکام کا کہنا تھا کہ یہ کم عمر ہے لہذا اس پر عدالت میں مقدمہ بھی نہیں چلایا جاسکتا تاہم اس کی رہائی کا فیصلہ اعلیٰ سطح پر ہی کیا جائے گا۔

  2. #2
    ITT PRINCE Princee's Avatar
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Heart
    Posts
    989

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    MashaALLAH america in ko khoob pese dey raha ho ga is kisam k articles k
    hairat ki baat hay k is kisam k articles sirf bbc par hi kiun lagtey hain
    shayad ap jantey na hon bbc urdu par qadiyaniyon ka qabza hay

  3. #3
    Member arslansuns's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Age
    26
    Posts
    680

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    abeh ye bacha galat line par lag gaya ho ga ise roka to is ny america ka sahara liya wesy b kuch logo ko ghalat line matlab movies film dekhne se roka jaye to wo eman sy phir jateh hen
    jesy kuch log yahan par hamareh forum par b mojod hen oneh roka jaye to
    wo rokhneh k bajaye or ziyada musharraf ki tareef karteh hen take wo or ghlata chezon ko farog dy or ham or ziyada behaya sy tafreh hasil karen bas musharraf ko geo musharraf kehteh rahen wo hamehn kisi behayai k kam sy nahi rokeh ga kuxh log jawan hoteh hen to kud ko hawaon men ora leteh hen behoda movies ye wo ine roko to musharraf ya phir america ka sahara leteh hen

  4. #4
    Member arslansuns's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Age
    26
    Posts
    680

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    in sab ko america paisy detah hy
    jesy hamareh forum par b kuch log musharraf or america ko
    bartareh deneh k leye kosisehn karteh hen ono b america paisy detah hy
    aap samaj gaye honga k mene isera kahan kiya hy
    geo musharraf kaho or paisy kamao new earning system

  5. #5
    iTT Captain The Game's Avatar
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    963

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Hahaha Achee story hai Shoaib Mansoor ko day do movie bana dayga es pay

  6. #6
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by Prince View Post
    MashaALLAH america in ko khoob pese dey raha ho ga is kisam k articles k
    hairat ki baat hay k is kisam k articles sirf bbc par hi kiun lagtey hain
    shayad ap jantey na hon bbc urdu par qadiyaniyon ka qabza hay
    hmmmmmmmmmmmm
    aap ki baat per kafi had tak socha ja sakta hai
    thx 4 reply main zaroor socho ga is aat per

  7. #7
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by arslansuns View Post
    abeh ye bacha galat line par lag gaya ho ga ise roka to is ny america ka sahara liya wesy b kuch logo ko ghalat line matlab movies film dekhne se roka jaye to wo eman sy phir jateh hen
    jesy kuch log yahan par hamareh forum par b mojod hen oneh roka jaye to
    wo rokhneh k bajaye or ziyada musharraf ki tareef karteh hen take wo or ghlata chezon ko farog dy or ham or ziyada behaya sy tafreh hasil karen bas musharraf ko geo musharraf kehteh rahen wo hamehn kisi behayai k kam sy nahi rokeh ga kuxh log jawan hoteh hen to kud ko hawaon men ora leteh hen behoda movies ye wo ine roko to musharraf ya phir america ka sahara leteh hen
    bay fazol post kabhi tou tarekay ki post karrain

  8. #8
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by The Game View Post
    Hahaha Achee story hai Shoaib Mansoor ko day do movie bana dayga es pay
    koi jwab nahi dounga kuin k prince bhai nay waqi ik tareekay ki baat ki hai
    JO K MAYRAY DIL O demag dono accept kartay hain thank you prince bhai

  9. #9
    iTT Captain The Game's Avatar
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    963

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Yeh tu Apki bohat achee baat hai thxx

  10. #10
    ITT PRINCE Princee's Avatar
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Heart
    Posts
    989

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by mr_obaid View Post
    koi jwab nahi dounga kuin k prince bhai nay waqi ik tareekay ki baat ki hai
    JO K MAYRAY DIL O demag dono accept kartay hain thank you prince bhai
    MashaALLAH Obaid Bhai Bari khushi hoi k ap nay meri baat ko samjha
    or recently may aik article parh raha tha us may likha tha k America nay bbc or cnn ko millions of doller sirf propgenda karney k liye diye hain

  11. #11
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by Prince View Post
    MashaALLAH Obaid Bhai Bari khushi hoi k ap nay meri baat ko samjha
    or recently may aik article parh raha tha us may likha tha k America nay bbc or cnn ko millions of doller sirf propgenda karney k liye diye hain
    INHSALLAH aab bbc say koi article shair nahi karounga
    kuin k aap ki baat waqi bhut achi laggae
    or mayray jo baat dil o demag accept kartay hain wo main karta houn
    ALLAH BLESS u me
    and HOLE muslim ummah

  12. #12
    ~!~Haqq 4 Yaar~!~ Fasih ud Din's Avatar
    Join Date
    Jun 2008
    Location
    Fateh Jang,Pakistan
    Age
    30
    Posts
    4,160

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Quote Originally Posted by Prince View Post
    MashaALLAH america in ko khoob pese dey raha ho ga is kisam k articles k
    hairat ki baat hay k is kisam k articles sirf bbc par hi kiun lagtey hain
    shayad ap jantey na hon bbc urdu par qadiyaniyon ka qabza hay

    oh reallly ?????????????BBCURDU qadyanion ki hai?????pakki bat hai yaaa nahi ???

    [IMG]http://i45.*******.com/349e4vm.gif[/IMG]

  13. #13
    Member arslansuns's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Age
    26
    Posts
    680

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    jis bat ka jawab na ho to fazol post keh do great tum to musharraf ki dublicate ho hahahahahahahha
    great work
    acha sach sach batao tum musharraf ka sath is leye deteh ho kyn k
    os ny indians or english channels or films par pabandi nahi lagaye
    hena pakreh gaye
    ker sahi hy is ko b fazol post keh do
    ker kya karen behayae ki aadat jo ho gaye hy
    GEO MUSHII behayae phelah kar geo musharraf

  14. #14
    Member arslansuns's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Age
    26
    Posts
    680

    Wink Re: must read a story of suside bomber (age 14)


    OFFFFFFF YE itnah barah mota katah
    or 14 saal ka hahahaha

  15. #15
    Member mr_obaid's Avatar
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    GhAr MaIn
    Posts
    7,023

    Re: must read a story of suside bomber (age 14)

    Theard closed
    becuz aab bbc k kisse article per bharosa nahi karna

Similar Threads

  1. ~*~Love Story~*~
    By SEEP in forum Shair o Shayri
    Replies: 12
    Last Post: 19th June 2010, 11:17 PM
  2. A Beautiful Story
    By SEEP in forum English Literature
    Replies: 9
    Last Post: 2nd January 2009, 12:58 AM
  3. Must Read This
    By shahzebawan in forum English Literature
    Replies: 0
    Last Post: 19th April 2008, 01:27 AM

Tags for this Thread

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •